وزیراعلیٰ پنجاب کی نواز شریف کو فوری ہسپتال منتقل کرنے کی منظوری

وزیراعلیٰ پنجاب کی نواز شریف کو فوری ہسپتال منتقل کرنے کی منظوری

لاہور(نیوزلیب) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو فوری ہسپتال منتقل کرنے کی منظوری دے دی۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے سروسز ہسپتال منتقلی کے احکامات جاری کر دئیے۔

محکمہ داخلہ پنجاب کا کہنا ہے نواز شریف کے ٹیسٹ سروسز ہسپتال میں ہوں گے، سینئر پروفیسرز کی رپورٹ پر نواز شریف کو ہسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا، جب تک ٹیسٹ مکمل نہیں ہوتے وہ ہسپتال میں ہی رہیں گے۔

یاد رہے گزشتہ روز سابق وزیر اعظم نواز شریف کا کوٹ لکھپت جیل میں میڈیکل بورڈ نے طبی معائنہ کیا اور رپورٹ میں ظاہر کیا کہ نواز شریف کو پیچیدہ مسائل درپیش ہیں، میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کو ہسپتال منتقل کرنے کی سفارش کی تھی جس پر لاہور کے سروسز ہسپتال میں خصوصی انتظامات کئے گئے۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق نواز شریف کو کسی بھی وقت ہسپتال منتقل کیا جا سکتا ہے۔

گزشتہ سے پیوستہ

میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو ہسپتال میں منتقل کرنے کی سفارش کی ہے۔ میڈیکل بورڈ نے طبی معائنہ کی رپورٹ محکمہ داخلہ کو بھجوا دی۔

6 رکنی میڈیکل بورڈ نے طبی معائنہ کی رپورٹ محکمہ داخلہ کو بھجوا دی۔ ذرائع کے مطابق میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کو ہسپتال میں منتقل کرنے کی سفارش کر دی۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے نواز شریف کے طبی معائنہ کیلئے میڈیکل بورڈ تشکیل دیا تھا۔

ایک روز قبل میڈیکل بورڈ نے کوٹ لکھپت جیل میں نواز شریف کا طبی معائنہ کیا تھا، ڈاکٹرز نے نوازشریف کا بلڈ پریشر چیک کرنے کے علاوہ ان کی ای سی جی اور ٹیسٹ کیلئے خون کے نمونے بھی لئے تھے۔ محکمہ داخلہ پنجاب بورڈ کی سفارشات کی روشنی میں نوازشریف کی ہسپتال منتقلی سے متعلق حتمی فیصلہ کرے گا۔

میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو ہسپتال میں منتقل کرنے کی سفارش کی ہے۔ میڈیکل بورڈ نے طبی معائنہ کی رپورٹ محکمہ داخلہ کو بھجوا دی۔

6 رکنی میڈیکل بورڈ نے طبی معائنہ کی رپورٹ محکمہ داخلہ کو بھجوا دی۔ ذرائع کے مطابق میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کو ہسپتال میں منتقل کرنے کی سفارش کر دی۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے نواز شریف کے طبی معائنہ کیلئے میڈیکل بورڈ تشکیل دیا تھا۔

ایک روز قبل میڈیکل بورڈ نے کوٹ لکھپت جیل میں نواز شریف کا طبی معائنہ کیا تھا، ڈاکٹرز نے نوازشریف کا بلڈ پریشر چیک کرنے کے علاوہ ان کی ای سی جی اور ٹیسٹ کیلئے خون کے نمونے بھی لئے تھے۔ محکمہ داخلہ پنجاب بورڈ کی سفارشات کی روشنی میں نوازشریف کی ہسپتال منتقلی سے متعلق حتمی فیصلہ کرے گا۔