سی پیک میں بلوچستان کو پورا حق دیں گے، وزیراعظم کا کوئٹہ میں خطاب

سی پیک میں بلوچستان کو پورا حق دیں گے، وزیراعظم کا کوئٹہ میں خطاب

کوئٹہ(نیوزلیب) وزیراعظم عمران خان کا کوئٹہ میں تقریب سے خطاب، کہا کہ اقتدار میں آکر سیاسی جماعتوں نے بلوچستان کا نہیں سوچا، سی پیک میں بلوچستان کو پورا حق دیں گے، صوبے کی ترقی کیلئے پورا زور لگائیں گے۔

کوئٹہ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اقتدار میں آکر سیاسی پارٹیوں نے بلوچستان کا نہیں سوچا، بلوچستان کے اپنے لوگوں نے بھی بلوچستان کی مدد نہیں کی جس طرح کرنی چاہیے تھی۔ ماضی میں بلوچستان کی ترقی پر توجہ نہیں دی گئی، بلوچستان میں ترقی کے لیے پورا زور لگاؤں گا۔ سی پیک میں بلوچستان کو پورا حق دیں گے، بلوچستان کے چیف منسٹر کی مکمل مدد کریں گے۔

وزیراعظم نے بلوچستان کے چیف منسٹر کو ہدایت کی کہ پنجاب کی طرح آپ بھی نیا بلدیاتی نظام لائیں، خیبرپختونخوا میں اختیارات نچلی سطح پر منتقل کیے گئے۔ بلوچستان میں گاؤں کی سطح تک اختیارات منتقل نہیں کریں گے تو حالات بہتر نہیں ہوں گے۔ ویلج کونسل بنا کر اختیارات منتقل کیے جائیں۔ بلوچستان کو بلدیاتی نظام کی سب سے زیادہ ضرورت ہے اور یہاں خیبرپختونخوا کی طرز کا بلدیاتی نظام ناگزیر ہے۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان ترقی کرے گا تو سارا پاکستان ترقی کرے گا۔ وفاقی حکومت ہر ممکن بلوچستان حکومت کی مدد کرے گی۔ دہشت گردی کیوجہ سے بلوچستان کا بہت زیادہ نقصان ہوا، بلوچستان میں کینسر ہسپتال کی بھی ضرورت ہے، شوکت خانم کے چیف ایگزیکٹو کو بلوچستان بھجواؤں گا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ بلوچستان کا بہت بڑا ایشو کرپشن ہے، کوئی بھی معاشرہ کرپشن پر قابو پائے بغیر ترقی نہیں کرسکتا۔ چین نے 4 سالوں میں کرپشن کیوجہ سے لاکھوں گورنمنٹ افسران کو پکڑا، کرپشن 2 کام کرتی ہے، ایک تو انسانوں پر خرچ ہونے والا پیسہ بیرون ملک چلا جاتا ہے دوسرا کرپشن کیوجہ سے اداروں کی تباہی سے ملک تباہ ہوجاتا ہے۔

وزیر اعظم کا اپنے خطاب میں مزید کہا کہ پاکستان 28 ہزار ارب کا مقروض ہے، قرضوں کیوجہ ہی کرپشن ہے۔ چوری کرکے اداروں کو تباہ کیا گیا، ہر ادارہ کرپشن کیوجہ سے تباہ ہوچکا ہے۔ کرپشن کرنے کے لیے نااہل لوگوں کو اوپر بٹھایا گیا۔ ماضی کی غلطیوں سے ہمیں سیکھنا ہوگا، نیا بلوچستان بنائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ جام کمال کا وزراء کے ہمراہ سدرن کمانڈ ہیڈکواٹرز کا دورہ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے استقبال کیا، کمانڈر سدرن کمانڈ نے وزیراعظم کو بلوچستان کی سیکیورٹی صورتحال پر بریفنگ دی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ جام کمال نے وزراء کے ہمراہ سدرن کمانڈ ہیڈکواٹرز کا دورہ کیا، جہاں کمانڈر سدرن کمانڈ عاصم سلیم باوجوہ نے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ بلوچستان کو صوبے کی سیکیورٹی صورتحال پر بریفنگ دی۔

وزیراعظم عمران خان نے صوبے میں جاری ترقیاتی کاموں اور سیکیورٹی کی صورتحال بہتر کرنے پر سیکیورٹی فورسز کے کردار کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ قومی کوششوں سے انشاءاللہ ملک اور صوبے کو صحیح منزل کی جانب گامزن کریں گے، ملک اور صوبہ بلوچستان کی صحیح منزل امن، ترقی اور خوشحالی ہے۔

آرمی چیف نے کہا کہ کے پی میں استحکام حاصل کرنے کے بعد ہماری ترجیح بلوچستان ہے، بلوچستان پاکستان کا معاشی اقتصادی مستقبل ہے اب بلوچستان میں قیام امن ہمارا ہدف ہے۔