کرنسی سمگلنگ کیس: ایان علی کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز

کرنسی سمگلنگ کیس: ایان علی کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز

راولپنڈی(نیوزلیب) کرنسی سمگلنگ میں ملوث سپر ماڈل ایان علی کی مشکلات بڑھ گئیں۔ کسٹمز عدالت نے اشہاری قرار دینے کی کارروائی شروع کر دی۔ فاضل جج نے ریمارکس دیئے ملزمہ کبھی اومان تو کبھی دبئی جاتی ہے، عدالت میں پیش کیوں نہیں ہوتی۔

کرنسی سمگلنگ کیس میں تفتیشی آفیسر نے ایان علی کے جاری اشتہار کی رپورٹ جمع کرائی تو جج ارشد حسین بھٹہ نے کہا تین سال ہو گئے ملزمہ عدالت پیش نہیں ہوئی۔ ملزمہ کے وکیل نے جواب دیا میری موکلہ کی طبیعیت ناساز ہے، مارچ تک کا وقت دے دیں وہ واپس آ جائیں گی۔

فاضل جج کا برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہنا تھا ملزمہ کبھی اومان تو کبھی دبئی جاتی ہے عدالت میں پیش کیوں نہیں ہوتی، بار بار تاریخیں لینے کی بجائے میرے حکم کیخلاف حکم امتناعی لے آئیں، ایان علی کا ایک ضامن محمد نواز عدالت میں پیش ہو گیا، جبکہ دوسرے ضامن کو دوبارہ طلبی کا نوٹس جاری کر دیا گیا۔

عدالت نے ایان کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی شروع کرتے ہوئے سماعت 9 مارچ تک ملتوی کر دی۔

گزشتہ

کسٹمز کورٹ نے ایان علی کی کرنسی اسمگلنگ کیس ختم، ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری واپس لینے اور حاضری سے مستقل استثنیٰ کی درخواستیں مسترد کر دیں۔ عدالت نے 15 فروری کو پیش ہونے کا حکم دے دیا۔

خصوصی عدالت کسٹمز کے جج ارشد بھٹہ نے ایان علی کی تینوں درخواستیں سماعت کے بعد مسترد کر دیں۔ عدالت نے قرار دیا کہ ملزمہ بادی النظر میں کرنسی سمگلنگ میں ملوث ہے، کرنسی کی ضبطی کلکٹریٹ کسٹم کی سول قانونی کارروائی ہے، اگر ملزمہ 15 فروری کو پیش نہ ہوئی تو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی شروع ہو گی۔

کرنسی سمگلنگ میں ملوث سپر ماڈل نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری واپس لینے کی استدعا کی تھی، جبکہ مستقل استثنیٰ اور بریت کی درخواستیں بھی دائر کی تھیں۔ عدالت نے گواہان کو بھی 15 فروری کو پیشی کے نوٹس جاری کر دیئے۔