نیند کی کمی دماغی امراض کا سبب بن سکتی ہے

نیند کی کمی دماغی امراض کا سبب بن سکتی ہے

تحقیق کے مطابق جن لوگوں کو نیند کے مسائل کا سامنا ہوتا ہے، ان میں الزائمر امراض کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے۔

نیشنل انسٹیٹوٹ آف ہیلتھ کی تحقیق میں بتایا گیا کہ محض ایک رات نیند کی کمی ہی دماغی میں ایسے پروٹین کے اخراج کو فوری بڑھا دیتا ہے جو کہ الزائمر امراض سے تعلق رکھتے ہیں۔

اس سے قبل ماضی میں یہ بات سامنے آچکی ہے کہ ناقص نیند دماغی افعال کو ناقص بنانے کا باعث بنتی ہے۔

الزائمر امراض میں بیٹا ایمیلوئیڈ پروٹینز کا اجتماع ایمیلوئیڈ پلاک کو تشکیل دیتا ہے جو کہ اس دماغی مرض کی علامت ہے۔